سلمان شبیر

ضلع کیچ کے علاقہ تمپ میں گھر پر ڈکیتی کی واردات کے دوران مزاحمت پر ڈاکووں نے خاتون کو قتل کردیا. ڈاکو جانبحق خاتون کے کان سے بالیاں اتارنے اور گھر کا صفایا کرنے کے بعد فرار ہوگئے۔

تفصیلات کے مطابق، دازن تمپ میں نامعلوم ڈاکو گزشتہ شب ایک گھر میں داخل ہوئے جہاں ایک خاتون کے گلے کو چھری سےوار کر قتل کردیا اور کان سے بالیاں, موبائل فونز ,٢٢ ہزار روپےنقدی اور گھر کا دیگر قیمتی سامان لے کر فرار ہوگے. تمپ پولیس تاحال ملزمان کا سراغ نہیں لگا سکی ہے. پولیس ایس ایچ او تمپ نے بتایا ہے کہ ملزمان کی گرفتاری کیلئے پوچھ گچھ کیساتھ چھاپے مارے جارہے ہیں۔

گزشتہ پندرہ دنوں میں ضلع کیچ میں ڈکیتی کے دوران مزاحمت پر خاتون کی ہلاکت کا یہ دوسرا بڑا واقعہ ہے. اس سے پہلے تربت ڈھنُک میں مسلح افراد نے نقد رقم طلب کی اور مزاحمت پر خاتون کو اس کی چار سالہ بیٹی کے سامنے گولی مار کر ہلاک کردیا۔ خاندان کے دیگر افراد نے ایک ڈاکو کو پکڑ کر مقامی پولیس کے حوالے کردیا تھا۔

اس واقعے کے بعد تربت کے شہریوں سمیت دیگر سماجی کارکنان نے ٹویٹر پر بھی اس واقعے کے حوالے سے آواز بلند کی. سماجی رابطے کی ویب سائٹ کے صارفین نے بلوچستان حکومت سے واقعے کا نوٹس لے کر مجرموں کو گرفتار کرنے کا مطالبہ کیا تھا۔

یکم جون کو تربت شہر کے “شہید فدا چوک” پر مظاہرین کی ایک بڑی تعداد جمع ہوگئی۔ واشوک اور بولیڈا کے شہریوں نے صوبائی حکومت کے حفاظتی اقدامات پر سوال اٹھانے کے لئے ریلی نکالی اور تمام مجرموں کی گرفتاری کا مطالبہ کیا۔

LEAVE A REPLY