سلیمان ہاشم

گوادر شہر کے مختلف علاقوں میں گزشتہ ہفتے سے بجلی کی عدم فراہمی سے علاقہ مکین شدید پریشانی کا شکار ہیں. رمضان میں سحری اور افطار بنانے میں بھی شدید مشکل پیش آتی ہے۔

گوادر پریس کلب میں آل پارٹیز کے رہنماؤں کہدہ علی فیض نگوری،ایڈوکیٹ سعیدفیض ،مولانہ عدالحمید انقلابی ، ماجد سسہرابی مولا بخش مجاہد ، ، اعجاز حسین ، عثمان کلمتی ، مولانہ عبدالہادی اور افضل جان نے مشترکہ پریس کانفرنس میں اعلان کیا کہ اگر 24 گھنٹوں کے اندر شہر میں بجلی مکمل طور پر بحال نہیں ھوئی تو سخت عوامی احتجاج کیا جاہیگا۔ جس کی تمام تر زمہ داری کیسکو حکام اور ضلعی انتظامیہ پر عائد ھوگی۔

گوادر میں بجلی کی لوڈ شیدڈنگ ایک معمول بنتا جارہا ہے. گوادر میں لوڈشیڈنگ کی ایک اور وجہ یہ بھی ہے کہ جب کسی علاقے کا ٹرانسفارمر خراب ہوجاتا ہے تو واپڈا کی جانب سے اسے ہفتوں تک ٹھیک نہیں کیا جاتا ،لوگ مجبوراً چندہ جمع کرکے ٹرانسفارمر کو ٹھیک کراتے ہیں۔

رمضان اور گرمی کی وجہ سے شہریوں کا صابر کا پیمانہ لبریز ہوچکا ہے اور انہوں نے کہا ہے کے مجبور ہوکے اب احتجاج کا راستہ ہے واحد راستہ ہے۔

LEAVE A REPLY