عارف نور

مکران میں جاری مون سون کی بارشوں کا سلسلہ تھمنے کے بعد بھی حالات مکمل طور پے معمول پر نہیں آسکے ہیں. موسلا دھار بارش کی وجہ سے کاروبار معطل لوگ گھروں مین محصور ہوگئے۔سڑکوں اور گلیوں میں جمع پانی سے شہریوں کو شدید دشواری کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔گوادر ڈویلپمنٹ اتھارٹی کی طرف سے بنائے گئے اربوں روپوں کا نکاسی آب کا ناقص منصوبہ بھی بند ہوگیا ہے۔

بارش کے بعد گوادر کی گلیوں کا منظر۔نکاسی آب نہ ہونے کی وجہ سے بارش کا پانی گلیوں میں جمع ہے

بلدیہ گوادر کی جانب سے شہر کا پانی واٹر ٹینکر کے زریعے نکالنے کی کوشش کی جارہی ہے۔ بارش کی وجہ سے دو دن تک بجلی بھی معطل رہی. تاہم آج بجلی بحال کردی گئی ہے. انٹرنیٹ اور فون کی سروسز بھی دو دن سے بند رہیں یا بہت سست ہوگئیں. لوگوں نے اپنی مدد آپ کے تحت گلیوں اور گھروں سے بارش کے پانی کو نکالا. گوادر کے مین بازار ملا فاضل چوک سمیت تمام تجارتی مراکز پر بارش کا پانی تالاب کا منظر پیش کرنے لگا۔

بارش کے بعد گوادر کے بازار کا منظر

حالیہ تیز بارش کے سبب کوسٹل ہائی وے بدوک چیک پوسٹ کے قریب “برانگولی پل” کے قریب مین روڈ پر تقریباً 7 سے 8 فٹ چوڑا شگاف پڑ گیا. جس کے باعث کوسٹل ہائی وے پر ٹریفک روانی متاثر ہوگئی تھی. تاہم مکران کوسٹل ہائی وے ٹریفک کے لیے بحال کردیا گیا ہے دو دن سے پھنسی گاڑیوں کی آمدورفت بحال ہوگئی ہے۔

LEAVE A REPLY