عمران کمار

ہوندومل نامی ایک ہندو نے پیڑوں کی دکان پاکستان بننے سے پہلے شروع کی اور آج یہ پیڑے دنیا بھر میں مشہور ہیں

یہ پیڑے خالص دودھ اور چینی سے تیار کیے جاتے ہیں پھر ذائقہ اور خوشبو کےلیے اس میں بادام اور پستہ کے علاوہ بھی بہت سی چیزیں ملائی جاتی ہیں۔

 ان کے بنائے ہوئے پیڑے نا صرف پاکستان بلکہ پوری دنیا کے بڑے بڑے ممالک میں مشہور ہو گئے. اس شخص کی وفات کے بعد ان کے بیٹے اور کچھ شاگردوں نے اس کام کو جاری رکھا ہوا ہے۔

ضلع گھوٹکی کے یہ پیڑے امریکہ، چین، روس اور خاص طور پر بھارت میں زیادہ پسند کئے جاتے ہیں۔

LEAVE A REPLY