رحیم یارخان: قدیمی قبرستان کی زمین پر بااثر زمیندار کی جانب سے قبضہ کئے جانے پر چک 110 ون ایل میں ہندوبرادری نے احتجاجی مظاہرہ کیا۔ احتجاجی مظاہرے میں شریک جوگی جی‘ اجباجی‘ مصری جی‘ دادو جی‘ اتماں جی‘ کرشن جی اور دیگر نے میڈیا کوبتایا کہ چک 110 ون ایل میں 2007ء میں اس وقت کے ڈپٹی کمشنر نے اقلیتی برادری کیلئے 16 کنال زمین پر مشتمل قبرستان کی جگہ الاٹ کی جس کی جمع بندی بھی ہمارے پاس موجود ہے۔

کچھ عرصہ سے علاقہ کے مقامی زمینداروں نے قبرستان کی جگہ کی زمین پر قبضہ کرکے کاشتکاری شروع کردی ہے اور ہمارے آنے جانے کا راستہ بھی بند کردیا ہے۔ انہوں نے وزیراعلیٰ پنجاب‘ ڈپٹی کمشنر اور ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر سمیت دیگر اعلیٰ حکام سے مطالبہ کیا کہ اقلیتی برادری کے مختص قبرستان کی 2 ایکڑ اراضی قبضہ گروپ سے واگذار کروائی جائے اور آمد ورفت کا راستہ بھی بحال کروایا جائے۔